Khandani munafiq hain ap is liye by ALI ZARYUN urdu hindi poetry

Khandani munafiq hain ap is liye by ALI ZARYUN urdu hindi poetry
 Khandani munafiq hain ap is liye by ALI ZARYUN urdu hindi poetry

 


علی زریوں

خاندانی منافق

طنزکرنا ہے مجھ پر اجی کیجئے

کر رہے ہیں سبھی آپ بھی کیجئے

دیکھ بھی لیجئے بات بھی کیجئے

بات بھی کیجئے دیکھ بھی لیجئے

خاندانی منافق ہیں آپ اس لیے

دوستوں کی جڑیں کھوکھلی کیجئے

آپ اس کے سیوا کر بھی سکتے ہیں کیا

یعنی جو کر رہے ہیں وہی کیجئے

میں غلط بات بالکل نہیں مانتا

بات کرنی ہے جو بھی کھری کیجئے

حشر کے دن پہ کیوں ٹالتے ہیں مجھے

جو بھی کرنا ہے میرا ابھی کیجئے

 

Tanz karna hai mujh pe aji kijye

Kr rhe hain sabhi aap bhi kijye

Dekh bhi lijye baat bhi kijye

Baat bhi kijye dekh bhi lijye

Khandani munafiq hain app is liye

Dostoon ki jarein khokhli kijye

Aap is k siwa kr bhi ssaktey hain kya

Yani jo kr rhe hain wohi kijye

Main ghalat baat bilkul nahi manta

Baat karni hai jo bhi khari kijye

Hassar k din pe kyun taltey hain mujhe

Jo bhi karna hai mera abhi kijye

 

ALI ZARYUN

 

FOR MORE OF ALI ZARYUN




Post a Comment

1 Comments