Waise Main Ne Duniya Ma Kia Dekha Ha Tehzeeb Hafi Urdu Hindi Poetry

 

Waise Main Ne Duniya  Ma Kia Dekha Ha















In Urdu


 ویسے میں نے دنیا میں کیا دیکھا ہے

تم کہتے ہو تو پھر اچھا دیکھا ہے

میں اس کو اپنی وحشت تحفے میں دوں 

ہاتھ اٹھائے جس نے صحرا دیکھا ہے

بن دیکھے اس کی تصویر بنا لوں گا

آج تو میں نے اس کو اتنا دیکھا ہے

ایک نظر میں منظر کب کھلتے ہیں دوست 

تو نے دیکھا بھی ہے تو کیا دیکھا ہے 

عشق میں بندہ مر بھی سکتا ہے، میں نے

دل کی دستاویز میں لکھا دیکھا ہے

میں تو آنکھیں دیکھ کے ہی بتلا دوں گا 

تم میں سے کس کس نے دریا دیکھا ہے

اگے ںسیدھے ہاتھ پہ ایک ترائی ہے

میں نے پہلے بھی یہ رستہ دیکھا ہے

تم کو تو اس باغ کا نام پتہ ہو گا

تم نے تو اس شہر کا نقشہ دیکھا ہے




Urdu In  English


Waise Main Ne Duniya  Ma Kia Dekha Ha

Tum Khahte Ho Tu Phir Acha Dekha Ha

Mai Es Ko Apni Wehshat Tuhfe Main Dun 

Hath Uthae Jis Ne Sehra Dekha Ha

Bin Dekhy Es Ki Tasweer Bana Lun Ga

Aj Tu Main Ne Es Ko Itna Dekha Ha 

Aik Nazar Main Manzar Kab Khilte Hain Dost 

Tun Ne Dekha Bhi Ha Tu Kia Dekha Ha 

Ishq Main Banda Mar Bhi Sakhta Ha, Main Ne 

Dil Ki Dastaweez Main Likha Dekha Ha 

Main Tu Ankhain  Dekh Ke He Batla Dun Ga

Tum Ma Se Kis Kis Ne Dariya Dekha Ha 

Agey Sedhe Hath Pe Aik Tarai Ha 

Main Ne Pehle Bhi Ye Rasta Dekha Ha 

Tum Ko Tu Es Bagg Ka Nam Pata Ho Ga 


Tum Ne Tu Es Shahir Ka Naqsha Dekha Ha




Credit:Tehzeeb Hafi



Post a Comment

0 Comments