Baat Ko Ab Barhana Kia Dil Ko Aur Dokhana Kia Rizwana ziz Urdu Hindi Poetry Lyrics

 

Baat Ko Ab Barhana Kia 

Dil Ko Aur Dokhana Kia



















In Urdu


 بات کو اب بڑھانا کیا

دل کو اور دکھانا کیا


جذبات کی ہو قدر نہیں

وہاں لفظوں کو سجانا کیا


قفل ہو جب دروازے پر

لوٹ کے گھر کو جانا کیا


رہ جاؤں میں بن میں کہیں

تنہایوں سے اب گھبرانا کیا


منزل کا ہو جنہیں تعین نہیں

قافلے میں ان کے سمانا کیا


درد سے ہوں جو نا آشنا

زخموں کا ان سے تزکرانہ کیا


اندھیرے کو درکا ر ہے کرن

آفتاب کو دیا دیکھانا کیا


قدر کو اپنی گرانا کیا

بیتے قصّے کو دہرانا کیا




Urdu In  English


Baat Ko Ab Barhana Kia 

Dil Ko Aur Dokhana Kia


Jazbaat Ki Ho Kadar Nahi 

Wahan Lafzun Ko Sajana Kia 


Fukal Ho Jab Darwaze Per 

Laut Ke Ghar Ko Jana Kia 


Reh Jaun Main Bin Kahi

Tanhaiyun Se Ab Ghabrana Kia 


Manzil Ka Ho Jinhain Tayun Nahi 

Kafley Main En Ke Samana Kia


Dard Se Hun Ju Na Ashna

Zakhmun Ka En Se Tazkrana Kia


Andhere Ko Darkar Ha Kiran

Aftab Ko Diya Dekhana Kia


Kadar Ki Apni Girana Kia

Betey Kisay Ko Dahurana Kia




Credit:Rizwana aziz



Post a Comment

0 Comments