Sare Lehjey Tere Be Zaman Aik Ma Mohsin Naqvi Urdu hindi Poetry Lyrics

 

Sare Lehjey Tere Be Zaman Aik Ma

Es Bhary Shahir Main Raye gaan Main







In Urdu


سارے لہجے ترے بے زماں ایک میں

اس بھرے شہر میں رائیگاں ایک میں


وصل کے شہر کی روشنی ایک تو

ہجر کے دشت میں کارواں ایک میں


بجلیوں سے بھری بارشیں زور پر

اپنی بستی میں کچا مکاں ایک میں


حسرتوں سے اٹے آسماں کے تلے

جلتی بجھتی ہوئی کہکشاں ایک میں


مجھ کو فارغ دنوں کی امانت سمجھ

بھولی بسری ہوئی داستاں ایک میں


رونقیں شور میلے جھمیلے ترے

اپنی تنہائی کا رازداں ایک میں


ایک میں اپنی ہی زندگی کا بھرم

اپنی ہی موت پر نوحہ خواں ایک میں


اس طرف سنگ باری ہر اک بام سے

اس طرف آئنوں کی دکاں ایک میں


وہ نہیں ہے تو محسنؔ یہ مت سوچنا

اب بھٹکتا پھروں گا کہاں ایک میں

Urdu In  English


Sare Lehjey Tere Be Zaman Aik Ma

Es Bhare Shahir Main Raye gaan Main


Wasal Ke Shahir Ki Roshni Aik Tu 

Hijar Ke Dasht Main Karwan Aik Main


Bijliyun Se Bhari Barshain  Zoor Per

Apni Basti Main Kacha Makan Aik Main


Hasrtun Se Aty Asman Ke Taly 

Jalti Bujhti Hoi Kehkshan Aik Main


Mujh Ko Farig Dinu Ki Amanat Samjh 

Bholi Bisri Hoi Dastan Aik Main

Ronke Shoor Mele Jhumele Tere

Apni Tanhai Ka Razdan Aik Main 


Aik Main Apni He Zindagi Ka Bharam 

Apni He Maut Per Noha Khuan Aik Main 


Es Taraf Sang Bari Har Ek Bam Se 

Es Taraf Ainun Ki Dukan Aik Main


Wo Nahi Ha Tu Mohsin Ye Mat Sochna 

Ab Bhatakta Phirun Ga Kahan Aik Main

 


Credit:Mohsin Naqvi



Post a Comment

0 Comments