Trending

Ek Saya Mera Masiha Tha Jaun Elia Urdu Hindi Poetry Lyrics

 Ek Saya Mera Masiha Tha 


Kon Janey Wo Kon Tha Kia Tha

 

Wo Faqt Sahin Tak He Ati Thi


Main Bhi Hijre Se Kum Niklta Tha


Tujh Ko Bhola Nahi Wo Shaks Keh Ju

 

Teri Banhun Main Bhi Akeela Tha


Jan Lewa Thi Khuahshain Warna

 

Wasl Se Intezar Acha Tha


Baat Tu Dil Shikan Ha Per Yaro 


Akal Sachi Thi Ishq Ghota Tha 


Apne Mayar Tak Na Pehncha M


Mujh Ko Khud Per Bara Bhrosa Tha


Jism Ki Saaf Goi Ke Ba Wasf 


Rooh Ne Kitna Jhoot Bola Tha



ایک سایہ مرا مسیحا تھا


کون جانے وہ کون تھا کیا تھا


وہ مقط صحن تک ہی آتی تھی

 

میں بھی ہجرے سے کم نکلتا تھا


تجھ کو بھولا نہیں وہ شخص کہ جو 


تیری بانہوں میں بھی اکیلا تھا


جان لیوا تھیں خواہشیں ورنہ


وصل سے انتظار اچھا تھا


بات تو دل شکن ہے پر یارو 


عقل سچی تھی عشق جھوٹا تھا


اپنے معیار تک نہ پہنچا میں


مجھ کو خود پر بڑا بھروسہ تھا 


جسم کی صاف گوئی کے با وصف


روح نے کتنا جھوٹ بولا تھا






Post a Comment

Previous Post Next Post